ٹاپ سٹوری

  • ٹاپ سٹوری
  • Sep 11, 2018

بیگم کلثوم نواز لندن میں انتقال کر گئیں

سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز لندن میں انتقال کر گئیں۔بیگم کلثوم نوازکینسر کے مرض میں مبتلاتھیں اور گزشتہ کئی ماہ سے لندن کے ہارلے سٹریٹ کلینک میں زیر علاج تھیں ۔
بائیس اگست دوہزارسترہ کو بیگم کلثوم نوازکے گلے کے کینسرمیں مبتلا ہونے کی تشخیص ہوئی ۔ برطانوی ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ کلثوم نواز کا گلے کا کینسر ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے اور پیچیدہ مرحلے میں داخل نہیں ہوا ہے چنانچہ یہ قابل علاج ہے جس کےبعد ان کی کئی سرجریز کی گئیں اور وہ تقریباً ایک سال تک لندن کے ہارلے اسٹریٹ کلینک میں زیر علاج رہیں۔
جون دوہزاراٹھارہ کو انہیں دل کا دورہ پڑا ، جس کے بعد وہ کومہ میں چلی گئیں۔ 12 جولائی کو وہ کومے سے ہوش میں آئیں اور ان کی طبیعت بہتر بھی ہوئی جس کے بعد انہیں گھر پر منتقل کیا گیا لیکن پھر طبیعت بگڑنے پر انہیں واپس ہسپتال اوردوبارہ وینٹی لیٹرپر منتقل کرنا پڑ ا ۔
نوازشریف اوربیگم کلثوم نواز کے بڑے صاحبزادے حسین نوازنے لندن میں میڈیا کوبتایا کہ ان کی طبیعت گزشتہ روزبگڑ گئی تھی
لندن میں واقع ہارلے سٹریٹ کلینک نے بیگم کلثوم نواز کا ڈیتھ سرٹیفکیٹ جاری کر دیا ڈیتھ سرٹیفکیٹ جاری ہونے کے بعدان کی میت ریجنٹ پارک مسجد منتقل کردی گئی جمعرات کواسی مسجد میں ان کی نمازجنازہ ادا کی جائے گی ۔
شریف خاندان کی طرف سے ڈیتھ سرٹیفکیٹ جاری ہونے کے بعد کارنر سرٹیفکیٹ کیلئے درخواست دے دی گئی مجسٹریٹ کی جانب سے کارنرسرٹیفکیٹ جاری ہونے کے بعد میت کو پاکستان منتقل کیا جاسکے گا۔
لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن کے ہیڈ آف چانسری آصف خان ہارلے سٹریٹ کلینک پہنچے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ وہ شریف خاندان کی معاونت کیلئے آئے ہیں ۔
مسلم لیگ ن کے صدرشہبازشریف نے بیگم کلثوم نوازکی رحلت کی خبرکی تصدیق کی اورکہا کہ بیگم کلثوم نوازکی وفات ان کے خاندان کیلئے بڑا دھچکا ہے ۔انہوں نے ماں بہن بیٹی اوراہلیہ کے طورپرمثالی کردارادا کیا ۔مسلم لیگ ن اورجمہوریت محترمہ کلثوم نوازکی قرض داررہے گی
مسلم لیگ ن کے صدرشہبازشریف اڈیالہ جیل راولپنڈی پہنچے اورسابق وزیراعظم نوازشریف اورمریم نوازکیساتھ ملاقات میں بیگم کلثوم نوازکی میت کو پاکستان لانے ،تدفین اوردیگرامورپرمشاورت کی ۔ حمزہ شہباز،جنید صفدر، اور ماہ نور صفدر بھی اس موقع پران کے ہمراہ تھے
بیگم کلثوم نوازکے انتقال کی خبرسن پرمسلم لیگ ن کے کارکنوں کی بڑی تعداد جاتی امراء ،ماڈل ٹاؤن لاہور اوراڈیالہ جیل کے باہرجمع ہونا شروع ہوگئی
خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ بیگم کلثوم نوازکی تدفین جاتی امراء میں ہی کی جائے گی جس کیلئے انتظامات شروع کردیئے گئے ہیں ۔خاندانی ذرائع کے مطابق ان کی میت جمعے کے روز پاکستان لائی جائے گی۔