قومی

  • قومی
  • Sep 11, 2018

وزیرِ اعظم کی صدارت میں قبائلی علاقوں کے انضمام سے متعلق اجلاس

وزیرِ اعظم عمران خان نے قبائل کے رسم و رواج کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے نئے نظام کے نفاذ کو قابل عمل بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے ۔ انہوں نے ہدایت کی کہ نئے نظام کے اطلاق میں عوام کی مشاورت یقینی بنائی جائے۔ اسلام آباد میں قبائلی علاقوں کے انضمام کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ان علاقوں کے نوجوانوں کے لئے روزگار کی فراہمی کے مزید مواقع یقینی بنائے جائیں۔ عوام کے لئے سکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں مختص کوٹہ متاثر نہ ہو۔ وزیرِ اعظم نے سابقہ قبائلی علاقوں میں لوکل گورنمنٹ کے نظام کو رائج کرنے کے لئے کوشش تیز کرنے کی بھی ہدایت کی۔
عمران خان نے کہا کہ ضم ہونے والے علاقوں میں صحت، تعلیم اور خصوصا بچیوں کے سکولوں کو بہتر بنانے کے لئے کوششیں تیز کی جائیں۔ فوری اور سستےانصاف کی فراہمی کے لئے جلد از جلد طریقہ کار وضع کیا جائے۔ انھوں نے کہا کہ وفاقی حکومت ان علاقوں کے لئے ترقیاتی منصوبوں کے لئے درکار فنڈزسے زائد وسائل مہیا کرے گی۔ اس کے ساتھ این ایف سی ایوارڈ میں ترقیاتی پیکج کے حصول کے لئے وفاقی حکومت اپنا کردار بھرپور طریقے سے ادا کرے گی۔ اجلاس میں فاٹا انضمام اور وہاں عوام کے حقوق کے تحفظ کے لئے اہم فیصلے کئے گئے۔