قومی

  • قومی
  • Apr 05, 2016

عمران خان انسداد دہشتگردی عدالت پہنچ گئے

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ انصاف نہ ملا تو پھر سڑکوں پر نکلیں گے۔ دھاندلی کے خلاف احتجاج کرنے والے کارکنوں پر سے مقدمات ختم کیے جائیں۔ مقدمات کا سامنا کرنے والے جمہوریت کے ہیرو ہیں۔

پی ٹی وی حملہ کیس کی سماعت پر کارکنوں سے اظہار یکجہتی کیلئے اسلام آباد کی انسداد دہشتگردی عدالت پہنچنے کے بعد میڈیا سے گفتگو میں عمران خان کا کہنا تھا کہ کارکن 20 ماہ سے پیشیاں بھگت رہے ہیں، جمہوریت میں پرامن احتجاج کرناہر شہری کا حق ہے۔ پیشیاں بھگتنے والے محنت کش لوگ ہیں جو مختلف شہروں سے اپنا کام کاج چھوڑ کر یہاں آتے ہیں۔ان کا جرم صرف اتنا ہے کہ انہوں نے دھاندلی کے خلاف تحقیقات کا مطالبہ کیا۔

عمران خان نے کہا کہ آج جج سے اپیل کروں گا کہ کارکنوں پر ظلم ہورہا ہے ،ان پر مقدمات ختم کر کے انہیں انصاف دیں۔ مقدمات کاسامناکرنےوالےجمہوریت کےہیروہیں لیکن ان پر دہشتگردی کے مقدمات قائم کر دیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ صاحب اقتدار افراد نے منی لانڈرنگ کر کے رقم بیرون ملک رکھی ہوئی ہے لیکن ان پر کوئی مقدمہ قائم ںہیں کرے گا۔ پاناما لیکس کے بعد بیرون ملک تو تحقیقات کا آغازبھی کر دیا گیا لیکن پاکستان میں ذمہ داروں کو کوئی نہیں پو چھے گا۔

کپتان نے سوال اٹھایا کہ 22 جماعتوں نے کہا عام انتخابات میں دھاندلی ہوئی تو کیا دھاندلی کی تحقیقات کا مطالبہ ہمارا حق نہیں۔ دھاندلی کے خلاف احتجاج کرکے ہم نے کون سا قانون توڑا۔ یورپ ، امریکہ، برطانیہ ہر جگہ پر امن احتجاج کیے جاتے ہیں۔

صحافی نے عمران خان سے سوال کیا کہ پی ٹی وی حملہ کیس میں تو آپ بھی نامزد ہیں ، اگر عدالت نے آپ کی گرفتاری کا حکم دے دیا تو گرفتاری دیں گے یا ضمانت کرائیں گے؟ جواب میں کپتان بولے پہلے یہ بتائیں میں نے جرم کیا کیا ہے، دھاندلی کی یا مینڈیٹ چوری کیا۔ انہوں نے کہا کہ ضمانت نہیں کراؤں گا کیونکہ کوئی جرم نہں کیا۔ ضمانت وہ کرائیں جنہوں نے منی لانڈرنگ کی ہے۔

کپتان نے مزید کہا کہ اپر کلاس ٹیکس نہیں دیتی۔ منی لانڈرنگ کرتی ہے، قانون توڑتی ہے مگر انہیں کوئی نہیں پکڑتا۔ بےقصور کارکنوں پر قائم مقدمات ختم کر کے ہمیں انصاف دیاجائے۔