بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Oct 18, 2020

ایران پر 2015 میں اسلحے کی خرید و فروخت پر پابندیوں کی معیاد آج ختم ہوگئی،ایرانی وزارت خارجہ

اقوام متحدہ کی جانب سے ایران پر 2015 میں اسلحے کی خرید اور فروخت کے حوالے سے لگائے جانے والی پابندیوں کی معیاد آج ختم ہو گئی ہے۔ایرانی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ اسلحے کی منتقلی اور اس کی خرید و فروخت کے حوالے سے ایران پر لگائے جانے والی پابندیاں آج خودبخود ختم ہو گئی اور اس کے حوالے سے کسی اور ایکشن کی ضرورت نہیں ہے۔ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015 میں اقوام متحدہ کی قرارداد کی روشنی میں ایک جوہری معاہدہ طےپایا تھا جس کے مطابق اسلحے کی خرید و فروخت پر عارضی پابندی عائد کی گئی تھی۔ ۔یہ معاہدہ ایران اور دوسری عالمی طاقتوں امریکہ، چین،برطانیہ، فرانس، جرمنی ، روس اور یورپی یونین کے درمیان تھا لیکن امریکہ نے 2018 میں خود کو اس معاہدے سے الگ ہوکر ایران پر مزید پابندیاں عائد کر دیں تھیں۔