قومی

  • قومی
  • Oct 20, 2020

وزیرِ اعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس

وفاقی کابینہ نے ملک میں کورونا کیسز کی تعداد میں اضافے کےرجحان پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے زور دیا ہےکہ کورونا کی روک تھام کیلئے حفاظتی اقدامات خصوصاً ماسک کے استعمال اور دوسری احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔ وفاقی کابینہ کااجلاس وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرصدارت اسلام آباد میں ہوا۔
وفاقی کابینہ نے ملک میں کورونا کیسز میں اضافےپر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے بہترین حکمت عملی سے کورنا کی وباء کا مقابلہ کیا جس کا بین الاقوامی سطح پر اعتراف کیا گیا ہے۔ تاہم قوم کو وباء کی دوسری لہر کے پیش نظر انتہائی احتیاط کی ضرورت ہے۔کابینہ کو بتایا گیا کہ رواں ماہ سامنے آنے والے کیسز کی تعداد میں جولائی اگست کے مقابلے میں اضافہ ہوا اور کورونا مثبت کی شرح دو فیصد تک پہنچ چکی ہے جبکہ اموات کی تعداد جو کہ جولائی اور اگست میں ایک ہندسے میں تھیں وہ اب دو ہندسوں میں ہو گئیں ہیں۔ کابینہ اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ حفاظتی اقدامات خصوصاً ماسک کے استعمال اور دیگر ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے۔
اجلاس کے دوران وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی سید امین الحق نے ایم کیو ایم کے عہدیداران کی طرف سے وزیرِ اعظم کوویڈ ریلیف فنڈ کیلئے 1,033,933روپے کا چیک پیش کیا۔
کابینہ کو مستقبل کی ضروریات کے پیش نظر ملک میں گندم کے ذخائر اور درآمد کی جانے والی گندم کی صورتحال پر بریفنگ میں بتایا گیا کہ حکومت پنجاب کی جانب سے سترہ سے بیس ہزار ٹن یومیہ گندم ریلیز ہورہی ہے جسے پچیس ہزار ٹن تک بڑھایا جا رہا ہے۔ حکومت سندھ کی جانب سے بیس سے اکتیس اکتوبر تک پچاسی ہزار ٹن گندم ریلیز کی جا رہی ہے، سندھ نےبھی یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ فلور ملوں کو ان کی ضروریات کے مطابق گندم کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی
اجلاس کو ملک میں موجود چینی کے ذخائر، درآمد کی صورتحال اور قیمت کے حوالے سے بریفنگ میں بتایا گیا کہ چینی سے متعلق واجد ضیاء کی رپورٹ کے بعد فزیکل ویریفیکیشن کا عمل شروع کیا گیا۔ ۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ آئندہ بیس دنوں میں کرشنگ سیزن کا آغاز ہو جائے گااور کرشنگ سیزن میں تاخیر پر پچاس لاکھ یومیہ جرمانہ کیا جائے گا۔ اس حوالے سے حکومت پنجاب نے قانون میں ترمیم کر لی ہے۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ آئندہ چند دنوں میں دو لاکھ ٹن چینی ملک میں پہنچ جائے گی۔
وزیرِ اعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ گندم اور چینی کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ آئندہ اجلاس میں پیش کی جائے اس رپورٹ میں ضروری اقدامات تجویز کیئے جائیں۔کابینہ نے گن اینڈ کنٹری کلب اسلام آباد کی عارضیانتظامیہ کمیٹی اورسندھ انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ کو وزارتِ منصوبہ بندی وترقی کےما تحت رکھنے کی منظوری دی۔ کابینہ نے مختلف کمیٹیوں کے فیصلوں کی توثیق بھی کی۔