تفریح

  • تفریح
  • Nov 16, 2020

بلجیئم میں ریس لگانے والا کبوترو 1.6 ملین یورو کی ریکارڈ قیمت میں فروخت

کہتے ہیں شوق کا کوئی مول نہیں۔ جب انسان کو کوئی چیز پسند آ جائےتو وہ بعض اوقات اسے حاصل کرنے کیلئے کوئی بھی قیمت دینے کیلئے تیار ہو جاتا ہے ۔ ایسا ہی ہوا بیلجیم میں جہاں ریس لگانے والے کبوتر کوچین سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے 1.6 ملین یورو کی ریکارڈ قیمت پر خرید لیا ۔۔نیو کم نامی اس دو سالہ کبوتر کو صرف دو سو یورو کی قیمت فروخت کیا جانا تھا تاہم چین میں سے ایک شخص نے نیلامی میں اس کی قیمت 1.6 ملین یورو لگائی۔ اس کبوتر کو جس فیملی نے پالا تھا وہ یہ قیمت سن کرحیران رہ گئے۔اس سے پہلے ایک چار سالہ کبوتر کو 1.25 ملین یورو میں فروخت کیا گیا تھا جو کہ ایک ریکارڈ تھا۔تاہم جس وقت 2019 میں اسے فروخت کیا گیا تھا وہ ریس لگانے سے ریٹائر ہو چکا تھا اور اس کے کئی بچے کبوتر تھے۔ چین میں کبوتروں کی ریس کا کھیل کافی مقبولیت حاصل کر رہا ہے۔ریس میں اڑنے والے کبوتر عموماً دس سال کی عمر تک بچے پیدا کر سکتے ہیں اور توقع کی جا رہی ہے کہ نیو کم کے نئے مالکان اسے اسی کام کے لیے استعمال کریں گے۔