بین الاقوامی

  • بین الاقوامی
  • Nov 22, 2020

مسلم بچوں کی گھروں میں تعلیم پر پابندی ہوگی فرانسیسی صدر مسلمانوں کیخلاف مزید سخت قوانین متعارف کرانے کیلئے سرگرم

فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون نے مسلمانوں پر نئی پابندیاں لگانےاور مزید سخت قوانين متعارف کروانے کيلئے سرگرم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے فرینچ کونسل آف مسلم فیتھ کو 15 دن کی مہلت دی کہ وہ اس عرصے میں وہ فرانس کے وزارت داخلہ کے ساتھ کام کریں۔بچوں کو شناختی نمبر دیا جائے گاجس کے تحت اس بات کی نگرانی کی جا سکے گی کہ وہ سکول جا رہے ہیں۔ جو والدین قانون کی خلاف ورزی کریں گے ان پر بھاری جرمانے لگائے جائیں گے اور چھ ماہ کی جیل بھی ہو سکتی ہے۔نئے قوانین کے مطابق بچوں کی گھروں میں تعلیم پر پابندی ہوگی۔