قومی

  • قومی
  • Nov 28, 2020

وفاقی وزیر اسد عمر کی میڈیا سے گفتگو

وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ اپوزیشن کورونا صورتحال پر سیاست کر رہی ہےجبکہ حکومت کی تمام توجہ عوام کے تحفظ اور روزگار پر مرکوز ہے۔سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ اپوزیشن والے اپنی جانوں کی طرح کارکنوں کے تحفظ کا بھی سوچیں۔اپوزیشن نے صرف 4اجلاسوں میں شرکت کے بعد پارلیمانی کمیٹی کورونا کا بائیکاٹ کر دیا۔
وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ ہم تو اپوزیشن سے قومی امور پر بات کرنے کے لیئے باربار رابطہ کرتے ہیں جو ہمارا فرض ہے مگر اپوزیشن ہر معاملے پر سیاست کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نواز شریف کو بار بار ملک آنے کی دعوت دے رہے ہیں۔ اسد عمر نے کہا کہ ہم اسٹیل ملز کو منصوبہ بندی سے فعال کر رہے ہیں جس پر وفاقی وزیر میاں محمد سومرو کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چینی اور آٹے کی قیمت کم ہو گئی ہے تاہم سندھ میں آٹا پنجاب سے زیادہ قیمت پر فروخت ہو رہا ہے جسے سندھ حکومت کو دیکھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے سکھر کے عوام کو صاف پانی بھی نہیں مل رہا جہاں سے دریا ئےسندھ گذر رہا ہے جو سندھ حکومت کا کام ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ وہ شمالی سندھ کے دورے پر ہیں تاکہ ترقیاتی پیکیج کے اصل حقائق اور لوگوں کی تجاویز کی روشنی میں بنایا جا سکے۔
اس سے قبل سکھر میں تقریب سےخطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ اپوزیشن کی جماعت کے رہنما اپنی خاندان میں شادی کی تقریب میں شرکت کے لیئے کرونا ٹیسٹ لازمی قرار دے رہے ہے جبکہ پی ڈی ایم کے جلسوں میں عوام کو زیادہ سے زیادہ شرکت پر زور دیا جاتا ہے جو دوہرا معیار ہے۔ تقریب سے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن رہنما فردوس شمیم نقوی نے خطاب کیا ۔