بین الاقوامی

  • Jun 08, 2021

جنگی جرائم کی عالمی عدالت کا تاریخی فیصلہ : بوسنیا میں8ہزار مسلمانوں کے قاتل سربیا کے جنرل ملادووچ کی عمر قید کی سزا بحال

جنگی جرائم کی عالمی عدالت نے بوسنیا میں مسلمانوں کےقتل عام کے مرکزی کردار سربیا کے سابق آرمی چیف جنرل راتکو ملادووچ کی اپیل مسترد کرتے ہوئے عمر قید کی سزا بحال رکھی ہے۔ہیگ میں اقوام متحدہ کے جنگی جرائم ٹربیونل نے اپنے فیصلے میں لکھا کہ بوسنیا میں مسلمانوں کاقتل عام دوسری جنگ عظیم کے بعد بدترین خونریزی تھی۔جنرل ملادووچ نے1992سے95کے درمیان بوسنیا میں 8ہزار سے زائدمسلمان مردوں کو قتل کرا دیا تھا۔امریکہ کے صدر جو بائیڈن اوراقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن کی سربراہ مشل بیچلٹ نے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے انصاف کے عالمی ادارے پر دنیا کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے۔