قومی

  • Jun 24, 2021

قومی اسمبلی اجلاس

قومی اسمبلی کا اجلاس میں آج دسویں روز بھی وفاقی بجٹ دوہزار اکیس بائیس پر بحث جاری ہے ۔ پارلیمانی امور کے وزیرمملکت علی محمد خان نے بجٹ پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ رواں مالی سال میں زراعت صنعت اور خدمات کے شعبوں میں نمایاں ترقی ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی اولین ترجیح غریب اور نادار طبقے کی فلاح بہبود ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب سے مل کر پاکستان کو مضبوط بنانا ہے ۔ علی محمد خان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے احتساب کے حوالے سے واضح پیغام دیا ہے کہ احتساب پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔
بجٹ بحث میں حصہ لیتے ہوئے اپوزیشن ارکان مریم اورنگزیب ،حنا ربانی کھر ، رانا تنویر حسین ، پیر فضل حسین شاہ جیلانی اور میاں ریاض حسین پیر زادہ نے کہا کہ موجودہ بجٹ میں زراعت کی ترقی کے لئے ناکافی اقدامات کئے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو ان کے وعدے یاد کراتے رہیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ میڈیاریگولیٹری اتھارٹی کے مجوزہ قانون کو مسترد کرتے ہیں ۔حکومتی ارکان ڈاکٹر سیمی بخاری ، ڈاکٹر رمیش کمار ، احمد حسین ڈیڑھ ، شاندانہ گلزار اور فیض اللہ کاموکا نے کہا کہ وزیراعظم عمران کی ای کامرس اور ڈیجیٹل پاکستان ترجیح ہے ۔ انہوں نے کہاکہ انتخابی ، عدالتی اور ادارہ جاتی اصلاحات کے حوالے سے اپوزیشن حکومت کی مذاکرات کی دعوت قبل کرے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی بجٹ غریب دوست اور عوام دوست ہے ۔قومی اسمبلی کاجلاس جاری ہے ۔