قومی

  • Jan 25, 2023

کراچی،ایم کیو ایم کے رہنماؤں خالد مقبول،فاروق ستار کی نیوز کانفرنس

ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ انتخابات کے آئینی تقاضوں کو پورا کرنا ضروری ہے۔ مردم شماری سے انتخابات اور نتائج تک کے مراحل اس کا حصہ ہیں۔ کراچی میں ایم کیو ایم کے رہنماؤں کے ساتھ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ 15 جنوری کے بلدیاتی انتخابات بغیر حلقہ بندی کے ہوئے۔ ہم نے کہا تھا کہ آئینی قانونی الیکشن میں حصہ لیں گے۔ جس الیکشن میں ہم حصہ نہ لیں وہ الیکشن نہیں۔عدالتیں اور الیکشن کمیشن فیصلہ کریں کہ بلدیاتی انتخابات کس طرح قانونی ہیں؟ انہوں نے کہا کہ 31 دسمبر 2021ء کو سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ ٹین ون کے ذریعے سندھ حکومت نے صوبے بھر میں حلقہ بندی کی۔ اسی ایکٹ کے تحت 12 جنوری 2023ء کو سندھ حکومت نے نوٹیفکیشن واپس لے لیا۔ کراچی حیدرآباد میں نوٹیفکیشن واپس لینے کے بعد یو سی کی حلقہ بندی موجود نہیں تھی۔ ایم کیو ایم یہ مقدمہ عوام کے سامنے لے کر جائے گی۔ اس موقع پر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے سندھ حکومت کے نوٹیفکیشن کو نہیں مانا، لیکن کالعدم قرار نہیں دیا۔