قومی

  • Mar 04, 2024

وزیراعظم کی جانب سے میثاق مفاہمت اور میثاق معیشت کی تجویز کا خیر مقدم کرتے ہیں ،بلاول بھٹو زرداری

پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم کی جانب سے میثاق مفاہمت اور میثاق معیشت کی تجویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے اپوزیشن کو دعوت دی کہ ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے اور عوامی مسائل کے حل کے لئے مل بیٹھیں ۔۔ پاکستانی عوام نے ہم سیاستدانوں کو گالم گلوچ اور نعرہ بازی کے لئے نہیں بلکہ اپنے مسائل حل کرنے کے لئے منتخب کر کے پارلیمنٹ بھجوایا ہے، ہمیں انھیں مایوس نہیں کرنا چائیے۔
قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے اٹھارویں ترمیم کے تحت وفاق میں قائم اٹھارہ وزارتوں کے فوری خاتمے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایوان میں موجود تمام سیاسی جماعتوں کو ملک میں جوڈیشل اور معاشی اصلاحات کے لئے مل بیٹھنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعتوں کو پاکستان کی نئی نسل خصوصا نوجوانوں کے مسائل حل کرنے کے لئے اجتماعی شعور سے کام لینا ہو گا۔
اس سے پہلے رکن اسمبلی عمر ایوب خان نے گزشتہ روز اپنی مکمل تقریر براہ راست نہ دیکھائے جانے کے معاملے پر تحریک استحقاق پیش کی۔ رکن اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ وہ ملک میں آئین اور قانون کی بالادستی کے لئے جدوجہد جاری رکھیں گے۔
ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے وزیراعظم ، سپیکر اور ڈپٹی سپیکر منتخب ہونے والے ارکان اسمبلی کو مبارکباد دیتے ہوئے شور شرابے کے بجائے آئین و قانون کا راستہ اختیار کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انھوں نے ملکی معیشت کی بحالی اور سیاسی برداشت کے لئے سب سیاسی جماعتوں کو مل بیٹھنے کے لئے کہا۔۔بیرسٹر گوہر علی خان نے کہا کہ ملک میں قانون و انصاف کی حکمرانی کی ضرورت ہے۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ انکی پوری زندگی آئین و قانون کی بالادستی کی جدوجہد میں گزری ۔۔قومی اسمبلی اجلاس کی کاروائی جمعہ کی شام پانچ بجے تک ملتوی ہو گئی-